مختصر قرآنی دعائیں

Mubashir Saleem نے 'مسنون ادعیہ و اذکار' میں ‏جولائی 1, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. Mubashir Saleem

    Mubashir Saleem رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جون 24, 2014
    پیغامات:
    9
    رَبِّ زِدْنِي عِلْمًا


    ترجمہ : پروردگار میرا علم بڑھا ۔ (ترجمہ مولانا محمد جونا گڑھی )


    یہ دعا سورہ طہ ، آیت نمبر 114، سورہ نمبر 20 کا ایک حصہ ہے ۔ اصل آیت یوں ہے :


    فَتَعَالَى اللَّهُ الْمَلِكُ الْحَقُّ وَلَا تَعْجَلْ بِالْقُرْآنِ مِنْ قَبْلِ أَنْ يُقْضَى إِلَيْكَ وَحْيُهُ وَقُلْ رَبِّ زِدْنِي عِلْمًاترجمہ : پس اللہ تعالی عالی شان والا سچا اور حقیقی بادشاہ ہے ، تو قرآن پڑھنے میں جلدی نہ کر اس سے پہلے کہ تیری طرف جو وحی کی جاتی ہے وہ پوری کی جائے ، ہاں یہ دعا کر کہ پروردگار میرا علم بڑھا ۔


    تفسیر : جبریل علیہ السلام جب وحی لے کر آتے اور سناتے تو نبی صلی اللہ علیہ وسلم بھی جلدی جلدی ساتھ ساتھ پڑھتے جاتے کہ کہیں کچھ حصہ بھول نہ جائیں ، اللہ تعالی نے اس سے منع فرمایا اور تاکید کی کہ غور سے پہلے وحی کو سنیں، اس کو یاد کروانا اور دل میں بٹھا دینا ہمارا کام ہے ۔۔۔۔یعنی اللہ تعالی سے زیادتی علم کی دعا فرماتے رہیں ۔۔۔ (تفسیر : مولانا صلاح الدین یوسف )

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    یہ بہت جامع اور پیاری دعا حضرت موسی علیہ السلام نے اس وقت کی جب وہ مصر سے جان کے خوف سے نکل آئے اور مدین پہنچے جہاں وہ بالکل اجنبی تھے ۔

    رَبِّ إِنِّي لِمَا أَنْزَلْتَ إِلَيَّ مِنْ خَيْرٍ فَقِيرٌ


    ترجمہ : پروردگار تو جو کچھ بھلائی میری طرف اتارے میں اس کا محتاج ہوں ۔


    تفسیر : حضرت موسی علیہ السلام اتنا لمبا سفر کر کے مصر سے مدین پہنچے تھے ، کھانے کو کچھ نہ تھا ، جب کہ سفر اور بھوک سے نڈھال تھے ۔۔۔ خیر کئی چیزوں پر پر بولا جاتا ہے ، کھانے پر ، امور خیر اور عبادات پر ، قوت وطاقت پر ، اور مال پر ۔۔۔


    آیت نمبر 24، سورت القصص ، سورت نمبر 28، ترجمہ : مولانا محمد جونا گڑھی ، تفسیر : مولانا صلاح الدین یوسف ۔


    میرے ناقص خیال میں انسان اس دعا سے کبھی بے نیاز نہیں ہو سکتا ، ہم لمحہ لمحہ ، پل پل ، قدم قدم پر اپنے رب کی طرف سے عطائے خیر کے محتاج ہیں ، انسانی حیات کا وہ کون سا موقع ہے جہاں اس دعا کی ضرورت نہ ہو، اور۔۔۔ اس کو مانگ لینے کے بعد اور کیا مانگنا باقی بچتا ہے ؟ بے شک اس دعا میں جہان معانی آباد ہے اور یہ قرآن کریم کا بیانی معجزہ ہے

    ------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    حضرت آدم علیہ السلام کی دعا


    رَبَّنَا ظَلَمْنَا أَنفُسَنَا وَإِنْ لَمْ تَغْفِرْ لَنَا وَتَرْحَمْنَا لَنَكُونَنَّ مِنَ الْخَاسِرِينَاے ہمارے رب! ہم نے اپنا بڑا نقصان کیا اور اگر تو ہماری مغفرت نہ کرے گا اور ہم پر رحم نہ کرے گا تو واقعی ہم نقصان پانے والوں میں سے ہو جائیں گے

    سورۃ الاَعراف - آیت 23


    توبہ و استغفار کے یہ وہی کلمات ہیں جو حضرت آدم علیہ السلام نے اللہ تعالی سے سیکھے تھے۔ شیطان نے جب اللہ کی نافرمانی کا ارتکاب کیا تو اس کے بعد نہ صرف وہ اس پر اڑ گیا، بلکہ اس کے جوازو اثبات میں عقلی و قیاسی دلائل بھی دینے لگا۔ نتیجتاً وہ راندۃ درگاہ اور ہمیشہ کے لیے ملعون قرار پایا۔ اور حضرت آدم علیہ السلام نے اپنی غلطی پر ندامت و پریشانی کا اظہار اور بارگاہ الہی میں‌ توبہ و استغفار کا اہتمام کیا، تو اللہ کی رحمت و مغفرت کے مستحق قرار پائے۔ یوں گویا دونوں راستوں کی نشاندہی ہو گئی۔ شیطانی راستے کی بھی اور اللہ والوں‌کے راستے کی بھی ۔ گناہ کر کے اس پر اترانا ، اصرار کرنا اور اس کو صحیح ثابت کرنے کے لیے "دلائل " کے انبار فراہم کرنا شیطانی راستہ ہے۔ اور گناہ کے بعد احساس ندامت سے مغلوب ہو کر بارگاہ الہی میں‌ جھک جانا اور توبہ و استغفار کا اہتمام کرنا بندگان الہی کا راستہ ہے۔ اَلٰھمَّ ! اجعلنا منھم

    ------------------------------------------------------------------------------------------------------------

    رَبِّ اِشرَح لِی صَدرِی 0 وَ یَسِّر لِی اَمرِی سورۃ طہ : آیت نمبر 25 اور 26


    ترجمہ : اے میرے رب ! میرے لئے میرا سینہ کشادہ فرما اور میرا کام میرے لئے آسان فرما ۔

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    گھر والوں اور اولاد کے لیے ایک لیے بہت پیاری دعا


    رَبَّنَا هَبۡ لَنَا مِنۡ أَزۡوَٲجِنَا وَذُرِّيَّـٰتِنَا قُرَّةَ أَعۡيُنٍ۬ وَٱجۡعَلۡنَا لِلۡمُتَّقِينَ إِمَامًااے ہمارے رب ہمیں اپنی بیویوں اور اپنی اولاد سے آنکھوں کی ٹھنڈک دے اور ہم کو پرہیزگاروں کا امام بنا۔ سورۃ الفرقان۔ آیت ٧٤


    یعنی ان کو ایمان اور عمل صالح کی توفیق دے اور پاکیزہ اخلاق سے آراستہ کر کیونکہ ایک مؤمن کو بیوی بچوں کے حسن وجمال اور عیش و آرام سے نہیں بلکہ ان کی نیک خصالی سے ٹھنڈک حاصل ہوتی ہے۔اس کے لیے اس سے بڑھ کر کوئی چیز تکلیف دہ نہیں ہو سکتی کہ جو دنیا میں اسے سب سے زیادہ پیارے ہیں انہیں دوزخ کا ایندھن بننے کے لیے تیار ہوتے دیکھے۔ ایسی صورت میں تو بیوی کا حسن اور بچوں کی جوانی اسکے لیے اور بھی زیادہ سوہانِ روح ہو گی کیونکہ وہ ہر وقت اس رنچ میں مبتلا رہے گا کہ یہ سب اپنی ان سب خوبیوں‌کے باوجود اللہ کے عذاب میں‌گرفتار ہونے والے ہیں۔


    وَٱجۡعَلۡنَا لِلۡمُتَّقِينَ إِمَامًا " کی تشریحیعنی ہم تقوی اور طاعت میں سب سے بڑھ جائیں، بھلائی اور نیکی میں سب سے آگے نکل جائیں، محض نیک ہی نہ ہوں‌ بلکہ نیکوں‌کے پیشوا بھی ہوں، اور ہماری بدولت دنیا بھر میں‌ نیکی پھیلے۔ اس چیز کا ذکر بھی یہاں دراصل یہ بتانے کے لیے کیا گیا ہے کہ یہ وہ لوگ ہیں جو مال و دولت اور شوکت و حشمت میں‌ نہیں بلکہ نیکی و پرہیزگاری میں‌ ایک دوسرے سے بڑھ جانے کی کوشش کرتے ہیں

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    حضرت ايوب عليہ السلام كى دعا

    وَأَيُّوبَ إِذْ نَادَى رَبَّهُ أَنِّي مَسَّنِيَ الضُّرُّ وَأَنْتَ أَرْحَمُ الرَّاحِمِينَ (83)سورت الانبياء ، آيت 83، ترجمہ : اور جب ايوب عليہ السلام نے پکارا اپنے رب کو كہ مجھے بیماری لگ گئی ہے اور تو سب سے بڑھ کر رحم كرنے والا ہے ۔


    خط كشيدہ الفاظ بيمار دعا كے طور پر وردِ زبان رکھ سکتا ہے ۔ حضرت ايوب عليہ السلام كى بيمارى بڑی طویل اور صبر آزما تھی

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    جنت میں گھر طلب كرنے كى دعا

    رَبِّ ابْنِ لِي عِنْدَكَ بَيْتًا فِي الْجَنَّةِ ( جزء آيت نمبر: 11، سورت التحريم) ترجمہ : اے ميرے رب، ميرے ليے اپنے ہاں جنت ميں ايك گھر بنا دے ۔۔(ترجمہ از سيد ابوالاعلى مودودى)


    يہ دعا فرعون كى بيوى حضرت آسيہ (عليہا السلام ) نے کی تھی ۔

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    والدين کے ليے دعا

    رَبِّ ارْحَمْهُمَا كَمَا رَبَّيَانِي صَغِيرًا (24) سورة الإسراء ترجمہ : اے ميرے رب ، ميرے والدين پر رحم فرما جس طرح انہوں نےبچپن ميں مجھے پالا تھا ۔

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    شریر لوگوں سے محفوظ رہنے کے لیے دعا

    أَعُوذُ بِاللّهِ أَنْ أَكُونَ مِنَ الْجَاهِلِينَ (67) سورة البقرة(مسخری کرنا تو جاہلوں کا کام ہے) اللہ پاک مجھے اس سے پناہ میں‌رکھے کہ میں جاہلوں میں سے ہوجاؤں (سورۃ البقرۃ رکوع 8 ، آیت 67)یہ دُعا حضرت موسیٰ علیہ السلام نے اس وقت کی جب آپ نے بنی اسرائیل کو گائے ذبح کرنے کا حکم سنایا تو انہوں‌نے کہا کہ اے موسیٰ ! کیا تو ہم سے مذاق ومسخری کررہا ہے تو حضرت موسیٰ علیہ السلام نے جواب میں یہ الفاظ پڑھے

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    رَبَّنَا اٰتِنَا مِن لَّدُنکَ رَحمَۃً وَّ ھَیِّئ لَناَ مِن اَمرِنَا رَشَدًا: سورہ الکھف ایۃ 10اے ہمارے پروردگار! ہمیں اپنے پاس سے رحمت عطا فرما اور ہمارے کام میں ہمارے لیے راہ یابی کو آسان کر دے-اصحاب الکھف یعنی چند نوجوانوں نے اپنا ایمان و دین بچانے کے لیے جب غار میں پناہ لی تو یہ دعا مانگی-

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    حضرت نوح علیہ سلام کی دعاو َ قُل رَبِّ اَنزِلنِی مُنزَلاّ مُّبٰرَکاّ وَّ اَنتَ خَیرُا لمُنزِلِینَ اور کہنا اے میرے رب!اتار مجھ کو با برکت اتارنے کی جگہ اور تو ہی بہترین اتارنے والا ھےجب نوح علیہ سلام کو اللہ نے کشتی بنانے کا حکم دیا تو ساتھ میں یہ دعا بھی سکھائی کہ کشتی میں سوار ہوتے وقت یہ دعا پڑھنا،ہم بھی اپنے سفر کے دوران یہ دعا مانگ سکتے ہیں

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    مغفرت اور رحمت طلب كرنے كى دعا

    اللہ تعالى نے قرآن مجيد ميں ان الفاظ ميں مغفرت اور رحمت طلب كرنے كا حكم ديا ہے ۔


    وَقُلْ رَبِّ اغْفِرْ وَارْحَمْ وَأَنْتَ خَيْرُ الرَّاحِمِينَ (118) سورة المؤمنون


    ترجمہ : اور كہہ ديجیے كہ اے رب ، (ميرى) مغفرت كر اور رحم كر ، اور تو سب بہتر رحم كرنے والا ہے ۔

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------

    والدين کے لیے مغفرت طلب كرنے كى دعا

    رَبِّ اغْفِرْ لِيْ وَ لِوَالِدَيَّ ترجمہ : اے ميرے رب : ميرى اور ميرے ماں باپ كى مغفرت فرما ۔سورة نوح : 28

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    خود كو اور اولاد كو نماز قائم كرنيوالا بنانے كى دعا


    خود كو اور اولاد كو نماز قائم كرنيوالا بنانے كى دعا

    يہ خوب صورت اور مختصر مگر عظيم دعا حضرت ابراهيم عليه السلام كى ہے۔رَبِّ اجْعَلْنِي مُقِيمَ الصَّلَاةِ وَمِنْ ذُرِّيَّتِي رَبَّنَا وَتَقَبَّلْ دُعَاءِاے ميرے رب مجھے نماز قائم كرنے والا بنا اور ميرى اولاد ميں سے بھی۔ اے ہمارے رب دعا قبول فرما لے ۔سورة ابراهيم : آيت 40

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    ہدایت پر ثابت قدمی کی دُعا


    ہدایت پر ثابت قدمی کی دُعا

    رَبَّنَا لاَ تُزِغْ قُلُوبَنَا بَعْدَ إِذْ هَدَيْتَنَا وَهَبْ لَنَا مِن لَّدُنْكَ رَحْمَةً إِنَّكَ أَنْتَ ٱلْوَهَّابُ

    '' ائے ہمارے رب !‌ ہمیں ہدایت دینے کے بعد ہمارے دل ٹیڑھے نہ کردے اور ہمیں‌اپنے پاس سے رحمت عطا فرما، یقننا تو ہی بہت بڑی عطا دینے والا ہے''سورة آل عمران آیت 8ترجمہ : مولانا محمد جوناگڑھی رحمہ اللہ

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    رَبَّنَا آتِنَا فِي الدُّنْيَا حَسَنَةً وَفِي الْآخِرَةِ حَسَنَةً وَقِنَا عَذَابَ النَّارِ ﴿٢٠١﴾اے ہمارے رب! ہمیں دنیا میں نیکی دے اور آخرت میں بھی بھلائی عطا فرما اور ہمیں عذاب جہنم سے نجات دے

    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
    رَبِّ احْكُمْ بِالْحَقِّ١ؕ وَ رَبُّنَا الرَّحْمٰنُ الْمُسْتَعَانُ عَلٰى مَا تَصِفُوْنَؒ۰۰۱۱۲(الانبیاء(


    ’’ اے میرے رب، حق کے ساتھ فیصلہ کر دے ، اور لوگو! تم جو باتیں بناتے ہو ان کے مقابلے میں ہمارا ربِّ رحمان ہی ہمارے لیے مدد کا سہارا ہے


    -------------------------------------------------------------------------------------------------------------
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  2. بابر تنویر

    بابر تنویر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,318
    جزاك الله خيرا
     
  3. ام ثوبان

    ام ثوبان رحمہا اللہ

    شمولیت:
    ‏فروری 14, 2012
    پیغامات:
    6,690
    جزاک اللہ خیرا وبارك اللہ فیک
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں