ایک عجیب دعاء ۔۔ !

marhaba نے 'ادبی مجلس' میں ‏مارچ 11, 2012 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. marhaba

    marhaba ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏فروری 5, 2010
    پیغامات:
    1,667
    ایک عجیب دعاء

    آج بروز اتوار مولانا کا ویکلی لکچر بذریعہ انڑنٹ سن کر فارغ ہوا تو ایسے ہی بیٹھا ہوا سوچوں میں گم تھا ۔۔۔ اور اللہ سے سچی ہدایت کی دعائیں کررہا تھا ۔۔ اچانک میرے ذہن میں ایک خیال آیا ۔۔۔ دعاء جیسی کیفیت بن رہی تھی ،گھر میں ماءزمزم رکھا ہواتھا ۔۔۔ دل میں خیال آیا کہ زمزم پیتے ہوئے دعاء کرتے ہیں ۔۔۔ میں ایک گلاس بھر کر ماء زمزم لیا اور دعاء کرتے پینے لگا ۔۔۔ بہت سی دعائیں کی میں نے ۔۔۔ انہیں میں سے ایک عجیب دعاء میرے ذہن میں آئی ۔۔۔ میں نے اپنی پوری زندگی میں اس قسم کی دعاء کبھی نہیں کی تھی ، اور نہ ہی ایسا کبھی سوچا تھا ۔۔۔ خیر ۔۔۔ وہ عجیب دعا یہ تھی ۔۔۔ میں اللہ سے اس کی معرفت کے لئے دعاء کررہا تھا کہ میں نے اللہ سے کہا کہ ائے خدا ! میں ایک نچلا اور گرا ہوا انسان ہوں ،میری کچھ بھی حیثیت نہیں ہے ۔ نہ لوگوں میں نہ کسی اور میں ۔۔۔ یعنی میں ایک ذلیل انسان ہوں جو کسی بھی چیز کے قابل نہیں ۔۔۔ یعنی میں ایک غیر لائق انسان ہوں ۔۔۔۔۔ (دماغ کی اس وقت کی کیفیت ، میں بیان نہیں کرسکتا ۔۔۔ یہ شعوری طور پر بس جانا جاسکتا ہے ) لیکن اس کے باوجود یہ ایک حقیقت ہے کہ میری ماں میری اس حیثیت کے باوجود بھی ایسا نہیں کرےگی کہ وہ مجھے اکیلا چھوڑ دئے ، وہ مجھے پریشان حال دیکھے پھر بھی انجان بنی رہے ۔۔۔ میری ماں کی یہ حالت ہوگی کہ وہ بلک کر، لپٹ کر مجھے اپنے سینے سے لگا لےگی ۔۔ میرا بیٹا ۔۔۔میرا بیٹا ۔۔۔ میرا بیٹا ۔۔۔۔ بول بول کر روئےگی اور مجھے بھی رلائےگی ۔۔ یہ ایک ماں کا حال ہے ۔۔۔
    پھر میں خدا سے کہا کہ ۔۔۔۔۔۔ بے شک میں تیری معرفت کے لائق انسان نہیں ، میرے پاس وہ اہلیت نہیں جو تیری معرفت کے لائق ہو ۔۔۔ لیکن ایک ماں کا یہ حال ہوتا ہے تو، تو ستر ماں سے زیادہ محبت کرتا ہے ۔۔۔۔۔ تو کیا تو مجھے اپنی معرفت سے نہیں نوازےگا ۔۔۔۔ ؟؟؟ کیا تو مجھے اس لئے اپنی معرفت سے محروم رکھےگا کہ میں اس لائق نہیں ؟؟؟ ۔۔۔۔ میرا دل یہ کہہ رہا تھا کہ ۔۔۔۔ ایسا نہیں ہوسکتا ۔۔۔ ایسا نہیں ہوسکتا ۔۔۔ ایسا نہیں ہوسکتا ۔۔۔۔ یہ سوچ سوچ کر میں روہا تھا اور اس کی معرفت کے لئے دعاء کررہا تھا ۔۔۔ یہ سلسلہ تقریبا دس منٹ تک جاری رہا ۔۔۔ میں نے موقع کو مناسب سمجھ کر اللہ سے اور بھی دعائیں مانگی ۔۔۔جن میں سے ایک یہ بھی تھی کہ ائے اللہ الرسالہ مشن خالص اللہ کی دریافت پر کھڑا ہوا ۔۔۔ لوگ اسے چیر پھاڑ کررہے ہیں ۔۔۔۔ کیا تو اس کی حفاظت نہیں کرئےگا ؟؟؟ کیا تو نہیں بولےگا ؟؟؟ پھر میرے دماغ میں خیال آیا کہ ان لوگوں کیا قصور ہے ۔اے اللہ یہ تو تیری ہاتھ کی بات ہے ۔۔۔ اگر تو انہیں سمجھ دئے تو یہ سمجھ جائیں گے ۔۔۔ ائے اللہ تو ان سب کو ہدایت دئے ۔۔۔ ۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔

    اس طرح میری دعاء چلتی رہے ۔۔۔ اور جب ختم ہوئی تو دل نے بار بار یہ کہا کہ اپنی اس دعا کو اور لوگوں سے شئیر کرو ۔۔۔ اس کا فائدہ یہ ہوگا کہ دوسروں کو سچی دعاء کیسے ہوتی ہے سمجھ میں آئےگا ۔۔۔ اور وہ بھی اللہ سے مانگنے کی ہمت کریں گے ۔۔۔ بہر حال فائدہ ہوگا ۔۔۔
    تو دوستو یہ میری زندگی میں پہلی مرتبہ کی گئی عجیب دعاء تھی ۔۔۔ اللہ مجھے نظر بد سے بچائے ۔۔۔ مزید تعلق باللہ میں مضبوطی اور زیادتی عطا فرمائے ۔۔۔ آمین
    اگر آپ کو میری اس دعاء کے بارے میں جھوٹ کا گمان ہو تو میں کہوں گا کہ اللہ کی ذات موجود ہے ۔۔۔ بےشک آپ اس سے رجوع ہوکر جو کچھ کہنا چاہتے ہیں کہہ سکتے ۔۔۔ اللہ آپ کی مدد و نصرت فرمائے آمین ۔۔۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. حرب

    حرب -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 14, 2009
    پیغامات:
    1,082
    ان الفاظ کی ضرورت نہیں تھی۔۔۔میں صرف اتنا ہی کہوں گا کے کھبی کھبی ہمارے رویئے تلخ اور سخت ہوجاتے ہیں۔۔۔ اُن دوستوں کے ساتھ جن کے ہم بہت زیادہ قریب ہوتے ہیں یا جو ہمارے بہت قریب ہوتے ہیں۔۔۔ لیکن اُس کی وجہ حسد، بغض نہیں ہوتا۔۔۔ بلکہ وہ ناموافق حالات ہوتے ہیں جن کو ہم سمجھ رہے ہوتے ہیں مگر ایسا نہیں کے وہ ان حالات کو نہیں سمجھ رہے وہ بھی سمجھتے ہیں لیکن وہ اس طرح کا ردعمل ظاہر نہیں کرتے جو ہمارا ہوتا ہے۔۔۔جس وجہ سے کبھی کبھی ہم تلخی یا سختی سے کام لیتے ہیں۔۔۔ اس کا بہترین حل یہ ہے کے اپنے بھائی کے اس رویئے پر خاموشی اختیار کریں اور اس بات کو سمجھنے کی کوشش کریں کے کن حالات اور واقعات نے یہ اسباب پیدا کئے جس سے رویہ تلخ یا سخت ہوا۔۔۔ نہ کے ہم غیر ضروری بحث میں الجھ کر قاری کی دلچسپی کو بیزاری میں بدل ڈالیں۔۔۔

    اللہ رب العالمین سے دُعا ہے کے وہ حق اور سچ بات کہنے اور اس پر عمل کرنے کی تلقین عطاء‌ فرمائے اور دین کی صحیح سمجھ بھی عطاء‌ فرمائے۔۔۔ آمین یارب۔۔
     

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں