ہند بنت عتبہ کا حمزہ بن عبدالمطلب کے کلیجہ چبانے کا جھوٹا قصہ

ابوعکاشہ نے 'اسلامی متفرقات' میں ‏جون 26, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,859
    ہند بنت عتبہ رضی اللہ عنہا کا غزوہ احد میں حمزہ رضی اللہ عنہ کے کلیجہ چبانے کا جھوٹا قصہ

    تحریر:: ابوعبدالرحمن فوزی (مشہورواقعات کی ‌حقیقت )

    روایت ::
    أخبرنا عبد الله بن الحسن الحراني قال: نا النفيلي قال: نا محمد بن سلمة عن محمد بن اسحق قال: قد وقفت هند بنت عتبة كما حدثني صالح بن كيسان والنسوة الآتون معها يمثلن بالقتلى من أصحاب رسول الله صلى الله عليه وسلم يجدعن الآذان والآناف حتى اتخذت هند من آذان الرجال وأنافهم خذماً وقلائداً، وأعطت خذمها وقلائدها وقرطيها وحشياً غلام جبير بن مطعم، وبقرت عن كبد حمزة فلاكتها فلم تستطيع أن تسيغها، ثم علت على صخرة مشرفة فصرخت بأعلى صوتها وقالت، من الشعر حين ظفروا بما أصابوا من أصحاب رسول الله صلى الله عليه وسلم:نحن جزيناكم بيوم بدرفأجابتها هند بنت أثاثة بن عباد بن المطلب بن عبد مناف فقالت:والحرب بعد الحرب ذات سعر ما كان لي عن عتبة من صبر ولا أخي وعمه وبكر شفيت نفسي وقضيت نذري * شفيت وحشي غليل صدري فشكر وحشي علي عمري * حتى ترم أعظمي في قبري

    ««سيرة ابن إسحاق (كتاب السير والمغازي)»»
    ابن اسحاق سے مروی ہے کہ مجھ سے صالح بن کیسان نے بیان کیا کہ ہند بنت عتبہ رضی اللہ عنہا اور ان کے ساتھ شریک خواتین رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے شہدا ساتھیوں کا مثلہ کرنے لگیں ، وہ ان کے ناک اور کان کاٹ رہی تھیں‌، یہاں‌تک کہ ہند رضی اللہ عنہا نے جو اپنے ہار ، پازیب اور بالیاں وغیرہ وحشی کو دے چکی تھیں ، ان شہدا کے کٹے ہوئے ناکوں اور کانوں کے پازیب بنائے ہوئی تھیں اور انہوں نے سیدنا حمزہ رضی اللہ عنہا کا کلیجہ چیر کر نکالا اور چبانے لگیں‌، لیکن اسے بآسانی حلق میں اتار نہ سکیں تو تھوک دیا ۔ پھر ایک اونچی چٹان پر چڑھ گئیں اور بلند آواز سے چیختے ہوئے کہا :

    '' ہم نے تمہیں یومِ بدر کا بدلہ دے دیا ، جنگ کے بعد جنگ جنون والی ہوتی ہے ، عتبہ کے معاملے میں مجھ میں صبر کی سکت نہ تھی ، اور نہ ہی اپنے بھائی اور اس کے چچا ابوبکر پر میں نے اپنی جان کو شفا دی اور انتقام کو پور کیا ، وحشی تو نے میرے غصہ کی آگ بجھا دی ، پس وحشی کا مجھ پر عمربھراحسان رہے گا ، یہاں‌تک کہ قبر میں میری ہڈیاں بوسیدہ ہو جائیں‌''
    تخریج :

    ابن اسحاق نے اسے السیرتہ(ج 3 ص36) میں روایت کیا ہے ۔
    اس کی سند ضعیف ہے ، مرسل ہے (انقطاع کی وجہ سے ضعیف ہے )
    یہ قصہ ابن کثیر نے البدایہ والنہایہ (ج 4 ص37)میں نقل کیا ، پھر فرمایا :
    وذكر موسى بن عقبة: أن الذي بقر عن كبد حمزة وحشي فحملها إلى هند فلاكتها فلم تستطع أن تسيغها فالله أعلم.

    '' موسی بن عقبہ نے ذکر کیا کہ سیدنا حمزہ رضی اللہ عنہ کا کلیجہ وحشی نکال کر ہند بنت عتبہ کے پاس لائے تھے ، انہوں نے اس کو چپایا ، لیکن نگل نہ سکیں‌۔
    (ترجمہ:: محمد صدیق رضا / تخریج حدیث :: حافظ زبیر علی زئی )

    ابن کثیررحمہ اللہ تعالی نے اپنی تاریخ میں ابن اسحاق سےبھی نقل کیا ہے ۔ فرق صرف یہ ہے کہ ابن اسحاق نے لکھا ہے کہ ھند نے عورتوں کے ساتھ ملکر مثلہ کیا ، جبکہ ابن کثیر والی روایت میں‌ہے کہ وحشی نے کلیجہ نکال کر ہند کو دیا تھا ۔ جبکہ دونوں روایتیں ہی انقطاع کی وجہ سے ضعیف ہیں ۔ واللہ اعلم ۔
    (عُكاشة)
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
    • اعلی اعلی x 1
    • مفید مفید x 1
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,496
    جزاک اللہ خیرا وبارک فیک اخی فی اللہ ، کل میں نے سوچا تھا اس پر تفصیل سے لکھنے کا لیکن سبقنی بہا عکاشہ، ماشاءاللہ ۔
    اللہ تعالی ہم سے دفاع صحابہ رضوان اللہ علیہم اجمعین قبول فرمائے اور ہمیں روز محشر ان کے ساتھ جمع فرمائے ۔
     
  3. خان

    خان ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جنوری 27, 2011
    پیغامات:
    391
    تو ہند بنت عتبہ رضی اللہ عنہا کے بارے میں مکمل تفصیل کہاں ملیگی کہ یہ کون تھیں ؟
     
  4. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,859
    ہند بنت عتبہ رضی اللہ عنہا پہلے اموی خلیفہ ، کاتب وحی رسول صلی اللہ علیہ وسلم معاویہ بن سفیان رضی اللہ عنہ اور ام المؤمنین ام حبیبہ رضی اللہ عنہا کی ماں تھیں ۔ فتح مکہ کے موقع پر اسلام لائیں ۔ رومیوں کے ساتھ مسلمانوں کی مشہور جنگ یرموک میں اپنے خاوند ابوسفیان رضی اللہ عنہ کے ساتھ شریک ہوئیں ۔ چودہ ہجری میں وفات پائی ۔ اس کے علاوہ معلومات چاہیں ہو مل جائیں گی ۔

    هند بنت عتبة | موقع قصة الإسلام - إشراف د/ راغب السرجاني
    معاوية بن أبي سفيان أمير المؤمنين وكاتب وحي النبي الأمين صلى الله عليه وسلم - كشف شبهات ورد مفتريات الموقع الرسمي للمكتبة الشاملة
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. خان

    خان ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جنوری 27, 2011
    پیغامات:
    391
    جزاک اللہ بھائی
     
  6. بابر تنویر

    بابر تنویر منتظم

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,316
    آمین! یا رب العالمین
     
  7. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,757
    جزاک اللہ بھائی
     
  8. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,496
    جزاک اللہ خیرا ، حضرت ہند ،حضرت معاویہ رضی اللہ عنہما کی سگی والدہ ہیں ، اور حضرت رملۃ ام حبیبۃ کی حقیقی والدہ ہونے میں اختلاف ہے ۔ بعض نے لکھا ہے کہ حضرت معاویہ اور حضرت رملۃ حقیقی بہن بھائی ہیں ، جب کہ بعض مورخین نے ذکر کیا ہے کہ ام المومنین حضرت رملۃ رضی اللہ عنہا کی والدہ کا نام صفیۃ بنت ابی العاص ہے ۔

    لیکن اس سے حضرت ہند رضی اللہ عنہا کے مرتبے پر فرق نہیں آتا۔ آپ صحابیہ ہیں ، آپ سے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے بیعت لی ، صحابی رسول حضرت ابو سفیان رضی اللہ عنہا کی زوجہ ہیں ، کاتب وحی امیرالمومنین حضرت معاویہ کی والدہ ہیں ، یہ سب کوئی معمولی مراتب نہیں ۔ تفصیلا ان شاء اللہ میں اپنے تفصیلی مضمون میں ذکر کروں گی ۔
     
    • متفق متفق x 1
  9. ابوعمر

    ابوعمر محسن

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 23, 2007
    پیغامات:
    171
    جزاک اللہ خیر عکاشہ بھائی
    اسی واقعے کی تخریج درکار تھی۔ اللہ تعالیٰ ہمیں صحابہ کرام رضوان اللہ اجمعین سے محبت کرنے اور ان کا دفاع کرنے کی ہمت اور توفیق دے ۔ آمین

     
  10. dani

    dani نوآموز.

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 16, 2009
    پیغامات:
    4,333
    جزاک اللہ خیرا۔
     
  11. Abdulla Haleem

    Abdulla Haleem رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏جولائی 19, 2014
    پیغامات:
    118
    یہ تفصیلات اسی لڑی میں بیان ہوں گی یا کہیں اور؟
    اگر ہوچکی ہے تو ربط دے دیں۔ شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  12. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,496
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں