اپنا موبائل بیچنے سے پہلے یہ پریشان کن خبر ضرور پڑھ لیں

اہل الحدیث نے 'موبائل کی دُنیا' میں ‏جولائی 10, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,047
    پراگ (نیوز ڈیسک) موبائل فون سے ذاتی نوعیت کی تصاویر لینا اور ویڈیو بنانا معمول کی بات ہے اور ضرورت کے وقت انہیں ڈیلیٹ (DELETE) بھی کردیا جاتا ہے مگر ایک تازہ تحقیق نے یہ تشویشناک انکشاف کردیا ہے کہ ڈیلیٹ کرنے کے باوجود یہ تصاویر اور ویڈیو آپ کے فون سے ختم نہیں ہوتی ہیں اور انہیں باآسانی آپ کے فون سے نکال کر دیکھا جاسکتا ہے۔ یہ تحقیق انٹرنیٹ سیکیورٹی کی مشہور کمپنی ایواسٹ (Avast) نے کی ہے۔ سائنسدانوں نے اس بات کو ثابت کرنے کیلئے 20 عدد استعمال شدہ اینڈرائڈ موبائل فون حاصل کئے اور پھر عام دستیاب سافٹ ویئر FTK Imager اور اسی طرح کے دیگر سافٹ ویئر استعمال کرتے ہیں ان موبائل فونز سے وہ سارا ڈیٹا نکال لیا جو ان کے مالکان اپنے طورپر ڈیلیٹ کرکے مطمئن ہوچکے تھے۔سائنسدانوں نے معلوم کیا کہ ان فونز کے مالکان نے Delet All اور Reset کے آپشن کو استعمال کرکے اپنی تصویریں اور ویڈیوز ڈیلیٹ کی تھیں کیونکہ عام طور پر یہ سمجھا جاتا ہے کہ اس طریقہ سے ڈیٹا ہمیشہ کیلئے ختم ہوجاتا ہے۔ تحقیق کاروں نے انکشاف کیا کہ انہوں نے 20 عدد موبائل فونز سے کل 40000 تصاویر، 750 عورتوں کی فحش اور قابل اعتراض تصاویر اور 250 مردوں کی فحش اور قابل اعتراض تصاویر شامل تھیں۔ اس کے علاوہ ان موبائل فونز پر انٹرنیٹ کا جو استعمال ہوا تھا اس کی تفصیلات بھی حاصل کرلی گئیں، جبکہ 750 ای میل اور 250 لوگوں کے فون نمبر بھی برآمد ہوئے۔ اس تحقیق نے دنیا بھر کے موبائل فون صارفین کو اس پریشانی میں مبتلا کردیا ہے کہ ان کی تصاویر، ویڈیو اور دیگر ڈیٹا ڈیلیٹ کرنے کے باوجود فون میں موجود رہتے ہیں۔ ماہرین نے تجویز کیا ہے کہ اگر آپ اپنا ذاتی ڈیٹا ڈیلیٹ کرنے کے بعد اس کی جگہ کوئی بھی اور ڈیٹا سٹور کردیں یہاں تک کہ میموری فل ہوجائے تو اس صورت میں قوی امید ہے کہ ڈیلیٹ کردہ ڈیٹا دوبارہ نہیں مل سکے گا۔

    بحوالہ روزنامہ پاکستان
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 5
  2. ام ثوبان

    ام ثوبان رحمہا اللہ

    شمولیت:
    ‏فروری 14, 2012
    پیغامات:
    6,690
    اللہ اکبر
    هم اللہ کی کن کن نعمتوں کو جهٹلایئں گے
    تصویر اسلام میں کیوں منع هے آج سے کچه عرصہ پہلے جب نیٹ اور فون اور کیمرے نہیں تهے ان لوگوں کو اندازہ نہیں هو گا لیکن آجکل تو دیکه لیں کہ کوئ ایسی چیز جو همارے لیئے اور همارے معاشرے کے لیئے تباهیاں اور نقصان هیں اسی سے اللہ نے منع کیا ہے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 5
  3. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,492
    جزاک اللہ خیرا، اب ہر موبائل میں کیمرہ ہے تو جاندار کی تصویر کی ممانعت کسی کو یاد ہی نہیں رہی ، کسی پردہ دار خاتون کو بھی احساس دلایا جائے تو کہتی ہیں میں ابھی بس دیکھنے کے لیے تصویر لے رہی ہوں بعد میں ڈیلیٹ کر دوں گی ۔ اب مسلمان اللہ کے احکامات کی اتنی ہی پرواہ کرتا ہے تو پھر وہ ہماری کیا پرواہ کرے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. dani

    dani نوآموز.

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 16, 2009
    پیغامات:
    4,332
    ’فیکٹری ریسیٹ فون سے بھی برہنہ سیلفیز نکالی جا سکتی ہیں‘
    چیک ریپبلک کی ایک سکیورٹی کمپنی نے ’فیکٹری ریسیٹ‘ یعنی مکمل طور پر غیر استعمال شدہ حالت میں لائے گئے فونز میں سے بھی لوگوں کی ذاتی تصاویر نکالی ہیں۔

    کمپنی کا کہنا ہے کہ ان تصاویر میں برہنہ سیلفیز (صارفین کی اپنی تصاویر) بھی شامل ہیں۔

    ایسواسٹ نامی اس کمپنی کا کہنا ہے کہ انھوں نے اس کام کے لیے صرف وہ فورینزک ٹولز استعمال کی ہیں جو عام مارکیٹ میں میسر ہیں۔ اس کام کے لیے انھوں نے ای بے سے پرانے فونز خریدے۔

    تصاویر کے علاوہ کمپنی ای میل، ٹیکسٹ پیغامات اور گوگل کی سرچز بھی نکالی لی ہیں۔

    ماہرین کا کہنا ہے کہ اپنے ڈیٹا کو مکمل طور پر محفوظ رکھنے کا واحد طریقہ اپنے پرانے فون کو تباہ کرنا ہے۔

    بیشتر سمارٹ فونز میں فیکٹری ریسیٹ کی آپشن ہوتی ہے جس کا مقصد فون کو مکمل طور پر صاف کر دینا اور اسے ایسا بنا دینا ہوتا ہے جیسا کہ وہ فیکٹری سے نکلتے وقت تھا۔

    تاہم ایسواسٹ نے دریافت کیا ہے کہ کچھ پرانے سمارٹ فونز میں اس آپشن سے فون میں موجود فائلز کی انڈیکس غائب ہو جاتی ہے مگر ڈیٹا وہیں رہتا ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ مارکیٹ میں آسانی سے میسر سافٹ ویئر کی مدد سے تصاویر، ای میلز ٹیکسٹ پیغامات اور دیگر معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں۔

    کمپنی کا دعویٰ ہے کہ 20 فونز سے نکالی گئی 40،000 تصاویر میں سے 750 میں خواتین کو کپڑے اتارنے کے مختلف مراحل میں دیکھا جاسکتا ہے جبکہ 250 میں مرد حضرات برہنہ حالت میں دیکھے جا سکتے ہیں۔

    اس کےعلاوہ 1500 فیملی فوٹوز، ایک ہزار گوگل سرچز، 750 ای میل اور 250 کانٹیکٹ انفارمیشن بھی نکالے گئے۔

    کمپنی کا کہنا ہے کہ آپ کو اپنے اینڈروئڈ فون کو فروخت کرتے وقت صرف ڈیٹا ڈلیٹ کرنا کافی نہیں بلکہ آپ کو اپنی فائلز کے اوپر کچھ دیگر فائلز لگانا ہوں گی تاکہ وہ مکمل طور پر تباہ ہو جائیں۔

    کمپنی نے یہ واضح نہیں کیا کہ کیا تمام 20 فونز سے معلومات حاصل کی گئیں یا نہیں۔
    http://www.bbc.co.uk/urdu/science/2014/07/140712_naked_selfies_retrieved_sa.shtml
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں