خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے

dani نے 'کلامِ سُخن وَر' میں ‏دسمبر 27, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. dani

    dani نوآموز.

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 16, 2009
    پیغامات:
    4,329
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    عمران پرتاپ گڑھی

    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    بھلا کب تک ظلم ہوتے رہیں گے

    یہ معصوم معصوم رشتوں کی لاشیں
    لہو تر بتر کچھ فرشتوں کی لاشیں
    یونہی ان کے ماں باپ ڈھوتے رہیں گے
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے

    ترے نام کا لے کے جھوٹا سہارا
    جنہوں نے ہے معصوم بچوں کو مارا
    حقیقت میں ایمان والے نہیں ہیں
    وہ پاکیزہ قرآن والے نہیں ہیں
    ابھی کہہ رہا ہوں آئندہ کہوں گا
    درندے ہیں ان کو درندہ کہوں گا
    مری قوم کے لوگ سوتے رہیں گے
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے

    بہت ظالموں کے بڑھے حوصلے ہیں
    ترے دین کو ہی مٹانے چلے ہیں
    ہیں اخبار ان کے رسالے ہیں ان کے
    وہ گورے ہیں پر دل تو کالے ہیں ان کے
    کبھی ہم کو ناحق فسادی بتا کر
    کبھی ہم کو آتنک وادی بتا کر
    وہ نفرت کے ہی بیج بوتے رہیں گے خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    بھلا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے


    یہ ننھی سی آنکھوں میں سپنوں کی لاشیں
    ہر اک سمت ہیں میرے اپنوں کی لاشیں
    جدھر دیکھتا ہوں لہو ہی لہو ہے
    خدارا بتا دے کیوں خاموش تو ہے
    یہ عراق و کابل فلسطین والے
    یہ مظلوم و بے بس ترے دین والے
    یوں اشکوں سے دامن بھگوتے رہیں گے
    خدا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے
    بھلا کب تلک ظلم ہوتے رہیں گے

     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 4
  2. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,902
    شکریہ ۔ اچھی نظم ہے ۔ جب تک حضرت انسان موجود ہے ۔ ظلم ہوتے رہیں گے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  3. جاسم منیر

    جاسم منیر Web Master

    شمولیت:
    ‏ستمبر 17, 2009
    پیغامات:
    4,636
    ہممم اچھی نظم ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں