ڈرتا نہیں جو کبھی خدا سے، ڈر جاتا ہے زمانے سے

جاسم منیر نے 'کلامِ سُخن وَر' میں ‏دسمبر 27, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. جاسم منیر

    جاسم منیر Web Master

    شمولیت:
    ‏ستمبر 17, 2009
    پیغامات:
    4,636
    ڈرتا نہیں جو کبھی خدا سے، ڈر جاتا ہے زمانے سے
    کبھی ہے اپنے بھائی سے جھگڑا ، اور کبھی بیگانے سے

    دورنگی اپنانے والے ، اپنے اندر جھانک کے دیکھ
    گھر سے بھی آرام ہے غائب ، چین گیا میخانے سے

    وقت پڑا ہے امت پر ، اور تو اپنے حال میں مست
    اس دنیا میں تجھ کو غرض ہے بس دینار کمانے سے

    سچ ہوتا ہے کڑوا، لیکن اس کو پینا پڑتا ہے
    ہم سے سن روداد حقیقت ، جان چھڑا افسانے سے

    یاد خدا کی برکت ہی سے، مل جاتا ہے دل کو سکون
    آگے پیچھے کیوں ہوتا ہے پھر تو مسجد جانے سے

    حاکم اپنے رب کو مان اور منزل کر آسان اپنی
    صبح کا بھولا لوٹ آئے شاید یوسف کے سمجھانے سے


    شاعر: محمد یوسف چوہدری - کویت
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 4
  2. بابر تنویر

    بابر تنویر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,319
    بہت خوب۔شئرنگ کا شکریہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. ام محمد

    ام محمد -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏فروری 1, 2012
    پیغامات:
    3,120
    جزاک اللہ خیرا
     
  4. عطاءالرحمن منگلوری

    عطاءالرحمن منگلوری -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 9, 2012
    پیغامات:
    1,478
    بہت خوب.
    عوام الناس کی اکثریت زندوں سے نہیں بلکہ مردوں سے ڈرتی ہے..اللہ سےڈرنا شروع کر دیں تو مخلوق کا خوف ختم ہو.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  5. dani

    dani نوآموز.

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 16, 2009
    پیغامات:
    4,329
    واہ بہت خوب
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں