کیو موبائل کے اشتہار میں موت کے فرشتے کا مذاق

محمد عامر یونس نے 'ذرائع ابلاغ' میں ‏اپریل 18, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس محسن

    شمولیت:
    ‏مارچ 3, 2014
    پیغامات:
    901
    ﺍٓﭖ کیا کہے گے اس اشتہار کے بارے میں !

    ﺍﻧﺴﺎﻥ ﺑﻌﺾ ﺍﻭﻗﺎﺕ ﻣﺎﻝ ﮐﻤﺎﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﺌﮯ ﺍﺗﻨﺎ ﮔِﺮ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻤﺎﻡ ﻗﻮﺍﻧﯿﻦ، ﺍﺧﻼﻗﯿﺎﺕ، ﺍﻗﺪﺍﺭ ﯾﮩﺎﮞ ﺗﮏ ﮐﮧ ﻣﺬﮨﺐ ﮐﻮﺑﮭﯽ ﭘﺲِ ﭘﺸﺖ ﮈﺍﻝ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ۔

    ﺍﻧﺴﺎﻥ ﺑﻌﺾ ﺍﻭﻗﺎﺕ ﻣﺎﻝ ﮐﻤﺎﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﺌﮯ ﺍﺗﻨﺎ ﮔِﺮ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻤﺎﻡ ﻗﻮﺍﻧﯿﻦ، ﺍﺧﻼﻗﯿﺎﺕ، ﺍﻗﺪﺍﺭ ﯾﮩﺎﮞ ﺗﮏ ﮐﮧ ﻣﺬﮨﺐ ﮐﻮﺑﮭﯽ ﭘﺲِ ﭘﺸﺖ ﮈﺍﻝ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ، ﺍٓﺝ ﻗﻠﻢ ﺍﭨﮭﺎﻧﮯ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺍﯾﮏ ﭨﯿﻠﯽ ﻭﯾﮋﻥ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭ ﺑﻨﺎ ﺟﺴﮯ ﺩﯾﮑﮫ ﮐﺮﻣﯿﮟ ﺩﻧﮓ ﺭﮦ گیا
    ﭨﯽ ﻭﯼ ﭘﺮ ﻧﺸﺮ ﮨﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﺍﻭﺭ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭﺍﺕ ﮐﮯ ﺫﺭﯾﻌﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﮨﯽ ﺍﺧﻼﻗﯿﺎﺕ ﺍﻭﺭ ﻣﺸﺮﻗﯽ ﺍﻗﺪﺍﺭ ﮐﺎ ﺟﻨﺎﺯﮦ ﻧﮑﺎﻻ ﺟﺎﭼﮑﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺏ ﻣﺬﮨﺐ ﺑﮭﯽ ﺍﻥ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭﺍﺕ ﮐﯽ ﺯﺩ ﺳﮯ ﺑﺎﮨﺮ ﻧﮧ ﺭﮦ ﺳﮑﺎ، ﺧﺼﻮﺻﺎً ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﻓﻮﻧﺰ ﮐﮯ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭﺍﺕ ﺳﺮِ ﻋﺎﻡ ﻧﻮﺟﻮﺍﻥ ﻟﮍﮐﮯ ﻟﮍﮐﯿﻮﮞ ﮐﻮ ﺑﮯ ﺭﺍﮦ ﺭﻭﯼ ﮐﯽ ﺗﻠﻘﯿﻦ ﮐﺮﺗﮯ ﺩﮐﮭﺎﺋﯽ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ۔ ﻧﺖ ﻧﺌﮯ ﮐﺎﻟﺰ، ﺍﻧﭩﺮﻧﯿﭧ، ﺍﯾﺲ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ ﺍﻭﺭ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ ﭘﯿﮑﯿﺠﺰ ﮐﮯ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭﺍﺕ ﮐﯿﺎ ﮐﻢ ﺗﮭﮯ ﮐﮧ ﺍﺏ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﻓﻮﻧﺰ ﻭﺍﻟﮯ ﺑﮭﯽ ﺳﻮﻧﮯ ﭘﺮ ﺳﮩﺎﮔﮧ ﮐﺮﻧﮯ ﻣﯿﺪﺍﻥ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﺩ ﭘﮍﮮ ﮨﯿﮟ؟

    [HIGHLIGHT]ﻣﯿﮟ ﺑﺎﺕ ﮐﺮ ﺭﮨﺎ ﺗﮭﺎ ﭨﯽ ﻭﯼ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭ ﮐﯽ، ﯾﮧ ﺍﯾﮏ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﻓﻮﻥ ﮐﺎ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭ ﮨﮯ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﺑﻈﺎﮨﺮ ﻣﻮﺕ ﮐﮯ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﮐﻮ ﺩﮐﮭﺎﯾﺎ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺍﯾﮏ ﻟﮍﮐﮯ ﮐﯽ ﺭﻭﺡ ﻗﺒﺾ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﺌﮯ ﺍٓﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﻭﮦ ﻟﮍﮐﺎ ﻣﮩﻠﺖ ﻣﺎﻧﮕﺘﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻣﯿﺮﮮ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﮐﯽ ﺑﯿﭩﺮﯼ ﺧﺘﻢ ﮨﻮﻧﮯ ﺗﮏ ﻣﺠﮭﮯ ﭼﮭﻮﭦ ﺩﮮ ﺩﯼ ﺟﺎﺋﮯ، ﺧﻮﺍﮨﺶ ﮐﮯ ﺍِﺱ ﺍﻇﮩﺎﺭ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﺍُﺳﮯ ﭼﮭﻮﭦ ﺩﮮ ﺩﯼ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ۔ ﺍﺏ ﻟﮍﮐﺎ ﺍِﺱ ﻭﻗﺖ ﮐﻮ ﺧﻮﺏ ﺍﻧﺠﻮﺍﺋﮯ ﮐﺮﺭﮨﺎ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ، ﮐﺒﮭﯽ ﻓﻠﻢ ﺩﯾﮑﮭﺘﺎ ﮨﮯ ﺗﻮ ﮐﺒﮭﯽ ﮔﺎﻧﮯ ﺳﻨﺘﺎ ﮨﮯ۔ ﺍِﺱ ﺩﻭﺭﺍﻥ ﻣﻮﺕ ﮐﮯ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﮐﻮﺩﮐﮭﺎﯾﺎ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺗﻨﮓ ﺍٓﮔﯿﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﮐﺐ ﺍﺱ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﮐﯽ ﺑﯿﭩﺮﯼ ﺧﺘﻢ ﮨﻮ ﺍﻭﺭ ﻭﮦ ﺭﻭﺡ ﻧﮑﺎﻟﮯ ﮐﯿﻮﻧﮑﮧ ﺑﯿﭩﺮﯼ ﺑﯿﺲ ﺩﻥ ﺗﮏ ﭼﺎﺭﺝ ﺭﮨﺘﯽ ﮨﮯ۔

    ﺍﻟﻌﯿﺎﺫ ﺑﺎﻟﻠﮧ ! ﮨﺮ ﭼﯿﺰ ﮐﯽ ﺍﯾﮏ ﺣﺪ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ! ﺍﻭﭘﺮ ﺳﮯ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﮐﺎ ﮔﯿﭧ ﺍﭖ ﺍﺱ ﻃﺮﺡ ﮐﺎ ﺩﮐﮭﺎﯾﺎ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﻓﺮﺷﺘﮧ ﮐﻢ ﺍﻭﺭ ﺷﯿﻄﺎﻥ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻟﮓ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ، ﺍٓﺝ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﭘﺮ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭ ﺑﻨﺎ ﮨﮯ ﮐﻞ ﺧﺪﺍﻧﺨﻮﺍﺳﺘﮧ ﮐﺴﯽ ﺍﻭﺭ ﺑﺰﺭﮒ ﮨﺴﺘﯽ ﮐﻮ ﺑﮭﯽ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭ ﻣﯿﮟ ﺩﮐﮭﺎﯾﺎ ﺟﺎﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ، ﺍﯾﺴﮯ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﺳﮯ ﮐﭽﮫ ﺑﻌﯿﺪ ﻧﮩﯿﮟ ۔[/HIGHLIGHT]


    ﺍٓﺧﺮ ﻣﯿﮟ ﻣﯿﺮﯼ ﺑﺲ ﯾﮩﯽ ﮔﺰﺍﺭﺵ ﮨﮯ ﮐﮧ ! ﻣﺬﮨﺐ ﮐﻮ ﺍﭘﻨﮯ ﮐﺎﺭﻭﺑﺎﺭ ﮐﺎ ﺫﺭﯾﻌﮧ ﻧﮧ ﺑﻨﺎﻭٔ ﺍﻭﺭ ﮐﻢ ﺍﺯ ﮐﻢ ﻓﺮﺷﺘﻮﮞ ﮐﻮ ﺗﻮ ﺑﺨﺶ ﺩﻭ ! ﮐﭽﮫ تو اللہ ﮐﺎ ﺧﻮﻑ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺭﮐﮭﻮ، ﮨﺮ ﭼﯿﺰ ﻣﯿﮟ ﻣﺬﺍﻕ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺗﺎ، ﻣﻘﺪﺱ ﺭﺷﺘﻮﮞ ﮐﯽ ﺍﮨﻤﯿﺖ ﺗﻮ ﭘﮩﻠﮯ ﮨﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺭﮨﯽ ﺍﺏ ﻣﺬﮨﺐ ﮐﯽ ﺍﮨﻤﯿﺖ ﺗﻮ ﺑﺎﻗﯽ ﺭﮨﻨﮯ ﺩﻭ !

    ﺑﻘﻮﻝ ﺍﻗﺒﺎﻝؔ؎

    ﺧﺪﺍﻭﻧﺪﺍ ! ﯾﮧ ﺗﯿﺮﮮ ﺳﺎﺩﮦ ﺩﻝ ﺑﻨﺪﮮ ﮐﺪﮬﺮ ﺟﺎﺋﯿﮟ؟
    ﮐﮧ ﺩﺭﻭﯾﺸﯽ ﺑﮭﯽ ﻋﯿﺎﺭﯼ ﮨﮯ ﺳﻠﻄﺎﻧﯽ ﺑﮭﯽ ﻋﯿﺎﺭﯼ
    ﮐﯿﺎ ﺍٓﭖ ﺍﯾﺴﮯ ﺍﺷﺘﮩﺎﺭﺍﺕ ﮐﮯ ﺣﺎﻣﯽ ﮨﯿﮟ؟
    حوالہ بشکریہ ایکسپریس نیوز http://www.express.pk/story/348146/#
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 6
  2. Bilal-Madni

    Bilal-Madni -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 14, 2010
    پیغامات:
    2,468
    میدیامیے پیسہ کمانے کیلئے لوگ مذهب كا استعمال كر رهے ہے دین بیزار لوگو کیلئے پیسہ ہی خدا ہے الله اس فتنه سے محفوظ ركھے
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,492
    استغفراللہ، یہ کس کمپنی کا اشتہار ہے؟
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,492
    یہ تحریر اصل میں ایکسپریس نیوز کے ایک بلاگر کی ہے
    http://www.express.pk/story/348146/
    اور یہ انتہائی مذموم اشتہار کیو موبائل کا ہے۔ پیمرا کو فوری نوٹس لینا چاہیے یقینا اس میں مسلمان ہی بیٹھے ہیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  5. محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس محسن

    شمولیت:
    ‏مارچ 3, 2014
    پیغامات:
    901
  6. زیب النساء ابراہیم

    زیب النساء ابراہیم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 6, 2015
    پیغامات:
    16
    استغفراللہ اللہم لا تجعلنا منہم
     
  7. عطاءالرحمن منگلوری

    عطاءالرحمن منگلوری -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 9, 2012
    پیغامات:
    1,474
    استغفرالله!
    یہ تو نص قرآنی کا انکار ہے." ولن یوءخراللہ نفسا اذا جاء اجلہا" وقت مقررہ میں تقدیم و تاخیر نہیں ہوگی.کئ مقامات پر یہ بات موجود ہے.مسلم امہ کے مسلمہ عقائد کے خلاف اشتہار بنانا اسلامی عقائد اور فرشتوں کا مذاق اڑانے کے مترادف ہے.
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  8. ابن حسیم

    ابن حسیم ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏اکتوبر، 1, 2010
    پیغامات:
    891
    انا للہ وانا الی راجعون۔۔ خآک میں مل جائیں یہ کیو موبائیل والے۔۔
     
  9. ابو ابراهيم

    ابو ابراهيم -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مئی 11, 2009
    پیغامات:
    3,870
    استغفراللہ
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  10. طارق راحیل

    طارق راحیل -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 23, 2009
    پیغامات:
    350
    کاش کہ سنسر ہی اسے دیکھ لیتا
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں