شریعت اور اہل شریعت

عائشہ نے 'کلامِ سُخن وَر' میں ‏مئی 28, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,487
    دیا انسانیت کا درس تعلیمِ شریعت نے
    مگر ہے مسئلہ برعکس اب اہلِ شریعت کا

    نفاق و بغض کو معیوب ہی سمجھا نہیں جاتا
    ہو پھر کس طور پر بازار ٹھنڈا طعن و غیبت کا

    ہمیں ظاہر پرستی نے کیا ہے اس قدر اندھا
    کہ نورِ حق پہ پردہ پڑ گیا ہے جہل و ظلمت کا

    بدی سے ہم کو نفرت ہے نہ رغبت ہم کو نیکی سے
    جہنم کا ہے ڈر دل میں نہ ہے کچھ شوق جنت کا

    ہمارئ بے حسی پر جس قدر ماتم بھی ہو کم ہے
    تمنا سرخ روئی کی نہ کچھ افسوس ذلت کا

    یہی غفلت رہی باقی تو مٹ جائیں گے ہم اک دن
    کسی کو درگزر نہیں کرتا قانون قدرت کا

    نہیں چھوڑو گے آپس میں اگر فرقہ پرستی کو
    اتارے گا فنا کے گھاٹ تم کو ہاتھ فطرت کا

    تمہارا نام مسلم ہے مٹا دو نسبتیں ساری
    یہی راہِ ترقی ہے یہی زینہ ہے رفعت کا

    اسی اک نام پر تم مر مٹو یکجان ہو جاؤ
    بھلا دو نام ہر خود ساختہ مسلک کا، ملت کا

    تمہارا کام ہے باطل پرستی کو مٹا دینا
    تمہیں سونپا گیا ہے اس لیے یہ بار وحدت کا

    چلو تم راہ سنت پر ملے گی نعمت کونین
    ہے سم الفار ملت کے لیے ہر کام بدعت کا

    نہ ہونا چاہیے مایوس افضالِ الہی سے
    نزول اسلام پر ہونے کو ہے بارانِ رحمت کا​
    شاعر: مولاناداؤد راز دہلوی رحمہ اللہ
    پیام زندگی
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں