اللہ کو یہ پسند نہیں کہ عورت کا نام قرآن میں آئے ـ جنید جمشید

ابوعکاشہ نے 'ذرائع ابلاغ' میں ‏جولائی 19, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. مریم جمیلہ

    مریم جمیلہ رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 26, 2015
    پیغامات:
    111
    جزاکم اللہ خیرا۔ میرا بھی یہی خیال تھا مگر اہل علم کا موقف معلوم کرنا تھا۔
    میں نے جو بات سنی وہ یہ ہے کہ عورت ایک ڈھکی ہوئی شے ہے اور پچھلے وقتوں کے لوگ یہ پسند نہیں کرتے تھے کہ ان کی بیوی یا بیٹی وغیرہ کا نام لیا جائے۔ لیکن چونکہ حضرت مریم علیہا السلام کا ذکر ان کا نام لے کر کیا گیا ہے سو اس بات سے اس عقیدے کی نفی ہوتی ہے کہ نعوذباللہ وہ خدا کی بیوی ہیں۔
     
  2. نصر اللہ

    نصر اللہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏دسمبر 19, 2011
    پیغامات:
    1,845
    عجیب.
    یہ تو نہ عقل پر پوری اترتی ہے نقل سے ہی عقل میں آتی ہے،
    زرا غور کریں اگر وہ لوگ اتنی ہی غیرتوں والے تھے تو عورتوں کو سرے بازار بیچا کس لئے جاتا تھا.!
    عورتیں اتنی ہی زیادہ قریب تھیں تو زندہ درگور کیوں کی جاتیں تھیں.
    اتنے شرم و حیا والے تھے تو بازاروں میں بیٹھا کر کمائی کیوں کروائی جاتی تھی...!!!
     
    Last edited: ‏مئی 3, 2016
    • متفق متفق x 1
  3. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,860
    علماء نے ایک یہ وجہ عقیدے کی نفی بھی ذکر کی ہے
    قرآن میں مریم علیہ السلام کی کئی صفات بھی بیان ہوئی ہیں۔جن کی وجہ سے انہیں تمام دنیا کی عورتوں پرفضیلت حاصل ہے ۔اگرسب عورتوں کا نام لے لیاجائے توپھرکیا فضیلت رہے گی ۔مزیدقرآن اہم واقعہ کی طرف اشارہ کرتا ہے ۔ ثانوی حیثیت کی چیزوں کی تفصیل بیان نہیں کرتا ۔ اگراللہ کی پسند یا نا پسند کے اس قاعدہ کو مان لیا جائے تو قرآن میں سب زیادہ موسی علیہ السلام کانام آیا ہے اوران کا ہی تذکرہ ہے ۔ محمد چار بارآیا ہے ۔تو کیا اللہ کو یہ نام پسند نہیں یا پھرکم پسند ہے ـ
     
    • متفق متفق x 2
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. محمد مقیم

    محمد مقیم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏نومبر 12, 2016
    پیغامات:
    30
    بهائی اس پر نظر ثانی کرلیجیے.بازار میں جو عورتیں لائی جاتی تهیں ان کی سماجی حیثیت کیا تهی اور یہاں کن عورتوں کی بات ہورہی ہے. دوسرے یہ کہ دفن ضرور کردیا کرتے تهے لیکن یہ اتنا عام بهی نہیں تها جتنا واعظین فرماتے ہیں اور یہ فعل بهی وہ غیرت کے لیے کرتے تهے یہ الگ بات ہے کہ ان کی غیرت باطل تهی
     
    • مفید مفید x 1
  5. محمد مقیم

    محمد مقیم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏نومبر 12, 2016
    پیغامات:
    30
    مولانا طارق جمیل کا بیان نہیں بلکہ عورتوں کے تعلق سے یہ بہشتی زیور کی فہم ہے جہاں عورت کے سیکنڈ سیکس کی حیثیت سے سامنے آتی ہے اور جو نظریہ وہ مشنری نظریہ ہے نہ کہ اسلامی.
     
  6. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,495
    مومن عورتوں کے لیے قرآن مجید اور صحیح احادیث میں موجود باتیں اسلام پر ثابت قدمی کے لیے کافی ہیں۔ یہ تیسرے درجے کے مبلغ اپنے گھر کی خبر لیں۔
     
  7. محمد مقیم

    محمد مقیم رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏نومبر 12, 2016
    پیغامات:
    30
    میں نے کئی بار تدوین کی کوشس کی لیکن مجهے یہ آپشن نہیں ملا. کیا یہ آپشن موجود نہیں ہے؟
     
  8. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,495
    قرآن میں صحابہ میں سے بھی صرف ایک حضرت زید رضی اللہ عنہ کا نام آیا ہے تو کیا یہ خلاصہ نکالیں کہ اللہ کو صحابہ کا نام لینا پسند نہیں ؟ نعوذ باللہ
    اس طرح کے احمق مبلغ ہوں تو دین، علم اور تبلیغ ہر چیز کا حلیہ بگڑ جائے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں