شیخ محمد بشیر رحمتہ اللہ علیہ اور ان کی عربی زبان سے محبت

طالب علم نے 'مسلم شخصیات' میں ‏اکتوبر، 29, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. طالب علم

    طالب علم -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2007
    پیغامات:
    960
    شیخ محمد بشیر رحمتہ اللہ علیہ اور ان کی عربی زبان سے محبت

    6-7 سال قبل مولانا محمد بشیر کو راولپنڈی میں ایک مسجد میں سنا اور ان سے مہد اللغۃ العربیۃ کا سنا تو خوشی ہوئی کہ اسلام آباد میں بھی کوئی ادارہ ہے جہاں پر عربی سکھائی جاتی ہے اس سے پہلے میں ان کو نہین جانتا تھا۔ 2010 میں پھر اسلام آباد کی الفوز اکیڈمی میں ایک بارجانا ہوا جہاں مہد اللغۃ العربیۃ تو شیخ نے چند باتیں کہیں جو یقینا عربی زبان پر مائل کرنے والی تھیں جیسا کہ
    • ہر مسلمان بچہ عربی ہوتا ہے کیونکہ اس کے کان میں جو پہلا جملہ پڑتا ہے وہ عربی کا ہوتا ہے یعنی آذان
    • عربی زبان انگریزی سے زیادہ آسان ہے وجہ غالبا انہوں نے یہ بتائی کہ ہمارے کالج لیول کے طالب علم بھی انگریزی زبان پر دسترس نہیں رکھتے گرچہ وہ بہت ابتدا سے انگلش پڑھتے ہیں
    • ہمارے مدارس میں عربی کے مروجہ نصاب سے وہ اختلاف رکھتے تھے کہ گردانوں کا رٹا پر زور جبکہ وہ جس طریقے پر زور دیتے تھے کہ ابتدا میں ہی عربی کے چھوٹے چھوٹے جملے بنانے کی مشق کرائے جائے
    • وہ اکثر ذکر کرتے تھے کہ جب 70 کی دہائی میں کعبہ پر قبضہ ہوا تو اس وقت کے پاکستانی سفارت خانے کے مترجم نے 'خارجی' کا ترجمہ کافر کر دیا اور پاکستان کے اخباروں میں یہ شائع ہوا کہ کافروں نے مسجد الحرام پر قبضہ کر لیا ہے ۔نتیجتا لوگوں نے اشتعال میں آ کر اسلام آباد میں امریکی سفارت خانہ جلا ڈالا
    جہاں تک معھد اللغۃ العربیۃ کا تعلق ہے تو 2010 میں ایک چھوٹا سا کورس کرنے کے دوران اسے بہت عمدہ ادارہ پایا جس میں بلا تفریق مسلک لوگ عربی سیکھنے آتے ہیں اور اساتذہ عربی میں ہی گفتگو کرتے ہیں، اور نصاب میں شامل شیخ عبیدالرحمٰن کی کتاب اپنی نوعیت کی منفرد اور بہترین کتاب ہے لیکن اس وقت ادھوری تھی، شاید اب اس کا دوسرا حصہ شائع ہو گیا ہو۔

    میری ناقص رائے میں اگر بندے کو اردو آتی ہو اور قرآن پڑھنا آتا ہو تو عبیدالرحمٰن صاحب کی کتاب معلم القرآن پڑھ کر کم از کم ایک تہائی قرآن پاک کا ترجمہ خود سے کرنا سیکھ سکتا ہے۔ امید ہے کہ اس کتاب کا دوسرا حصہ شائع ہو گیا ہوگا۔ اللہ ان کو اپنے والد کے لیے صدقہ جاریہ بنائے، آمین!

    نیز دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ معھد اللغۃ العربیۃ کو اپنی عمارت عطا فرمائے کہ اس کے خزانوں میں کوئی کمی نہیں
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 7
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں