خدا کے باغیوں ہی کو متاعِ رہبری بیچی

عائشہ نے 'کلامِ سُخن وَر' میں ‏نومبر 16, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,494
    غلامی کا گلے میں طوق ڈالا سروری بیچی
    خدا کے باغیوں ہی کو متاعِ رہبری بیچی

    گناہوں کی سیاہی کو دلوں سے دور کیا کرتا
    وہ تاریکی کا متوالا کہ جس نے روشنی بیچی

    اب کے تم نے بیچ ڈالے ساغرو مینا
    مگر یہ کیا کہ تم رندوں نے اپنی تشنگی بیچی

    اسی کے واسطے دنیا اسی کے واسطے عقبی
    عوض جنت کے جس نے اپنے رب کو اپنی زندگی بیچی

    گلوں کو خار کہنے کی ابھی جرات ہے دنیا میں
    نہ جانے نوجوانوں نے کہاں اپنی خودی بیچی

    عزیزِؔ بے نوا کے فن کو دنیا بھول جائے گی
    اگر اس نے کبھی بازار فن میں شاعری بیچی

    شاعر: عزیز بیلگامی
    کلام شاعر بزبان شاعر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. بابر تنویر

    بابر تنویر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,319
    بہت خوب۔ شئرنگ کا شکریہ
    جزاک اللہ خيرا
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں