اقامت دین اور سجادہ نشینی

عائشہ نے 'کلامِ سُخن وَر' میں ‏دسمبر 6, 2016 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,487
    اقامتِ دین اور سجادہ نشینی
    شاعر: محترم خلیل الرحمن چشتی

    پریشاں کس لیے ہوتا ہے چشتی سمت منزل پر
    غلط کر غم، چڑھا ساغر، مزے سے مہ جبینی کر

    تو چشتی ہے تو اپنے سلسلے میں ہی مقید رہ
    سجا محفل مریدوں کی یا پھر خلوت گزینی کر

    تصوف کے رموز اسرار میں الجھا کر غریبوں کو
    کبھی عین الیقینی کر کبھی حق الیقینی کر

    بلندی احسن تقویم کی ہے گر گراں تجھ پر
    چمٹ کر خاک سے تو خاکساری اسفلینی کر

    مفسر سامنے تیرے جو مضمون جہاد آئے
    نہ ہو ناراض مغرب احتیاط اتنی یقینی کر

    بخاری اور مسلم کی حدیثیں مت سنا سب کو
    نہ تو حلاج و سرمد پر کھلی یوں نکتہ چینی کر

    خیالوں کے خلاؤں کا سفر مہنگا نہ پڑ جائے
    لہذا درک واحساس حقائق بھی زمینی کر

    کبھی کہہ یا محمد بھی کبھی اللہ کہہ دینا
    کبھی کہہ یا علی مولا کبھی تو یا خمینی کر

    جواز سجدہء تعظیم کی صورت بھی کوئی ڈھونڈ
    نہ آنا زد میں فتوؤں کی، کمال پیش بینی کر

    چڑھا چادر مزاروں پر، دعائیں لے بزرگوں کی
    ملیں گے ووٹ الیکشن میں، توقع یہ یقینی کر

    رومال سرخ گردن میں تو پگڑی سبز ہو سر پر
    سیاست تیری چمکے گی، سمجھ کر کام دینی کر

    بتوں کو بھی کیا کر خوش خدا کو بھی تو کر راضی
    قیامت کے سوالوں کی بھی مضمون آفرینی کر

    سمایا کیوں ہے سودا سر میں اس دیں کی اقامت کا
    مجاور بن یہ دعوت چھوڑ، سجادہ نشینی کر
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں