اللہ کے لئے "جہت" ثابت کرنا

ابوعکاشہ نے 'اسلامی متفرقات' میں ‏ستمبر 18, 2017 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,860
    اللہ کے لئے "جہت" ثابت کرنا

    شیخ ابن عثمین ۔رحمہ اللہ۔ لکھتے ہیں کہ :
    وہ صفات جن کا کتاب و سنت میں اللہ تعالی کے لئے نا اثبات ہے اور ہی نفی ۔ ان میں لفظ "جہت" کی مثال دی جاتی ہے ۔چنانچہ اگر کوئی سوال کرے کہ ہم اللہ کے لئے" جہت" ثابت کریں ؟ ہم جواب دیں گے کہ لفظ" جہت "کا کتاب و سنت میں اللہ تعالی کے لئے نا تو اثبات ہے اور نا ہی نفی ۔
    لہذا اس لفظ کی بجائے وہ صفت ثابت کریں ۔جو کتاب و سنت میں اللہ کے لئے ثابت ہے ۔ اور وہ اللہ تعالی کا آسمانوں میں عرش کے اوپر مستوی ہونا ہے ۔ جیسے اس کے شان کے لائق ہے
    http://www.urdumajlis.net/threads/صفات-الہی-کی-بابت-اہل-سنت-وجماعت-کا-عقیدہ.38722/
    اب جہاں تک "جہت" کے معنی کا تعلق ہے ۔ تو اس لفظ کے تین معنی ہو سکتے ہیں ۔
    جہت سفل ۔ یعنی نیچے کی جہت
    جہت علو ۔ یعنی اوپر کی جہت اس طرح کہ اس جہت نے اللہ کوگھیرا ہو
    جہت علو ۔ یعنی اوپر کی جہت ۔ اس طرح کہ اس جہت نے اللہ کو نہ گھیر ہو ۔
    جہت کا پہلا معنی اللہ کے حق میں باطل ہے ۔ کیونکہ یہ اللہ تعالی کے علو کے منافی ہے ۔ اور اللہ تعالی کا علو کتاب و سنت سے ثابت ہے ۔ اس کے علاوہ عقل ،فطرت ،اور اجماع امت بھی اللہ تعالی کے علو کو ثابت کرتے ہیں ۔
    جہت کا دوسرا معنی بھی اللہ تعالی کے حق میں باطل ہے ۔ کیونکہ اللہ تعالی اتنا بڑا ہے کہ مخلوقات میں سے کوئی چیز اس کا احاطہ نہیں کرسکتی ۔
    جہت کا تیسرا معنی حق ہے ۔ کیونکہ اللہ تعالی "العلی"بلندہے ۔ اپنی ساری مخلوقات کے اوپر ہے ۔ اور اس کی مخلوقات میں سے کوئی چیز اس کا احاطہ نہیں کرسکتی ۔
    اس قاعدہ پر کہ اللہ تعالی کی صفات ۔ کتاب و سنت سے ہی ثابت ہیں ۔

    ۔القواعد المثلی فی الاسماء والصفات۔ ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں