مولانا عیسی اصلاحی: ایک کامیاب معلم

صادق تیمی نے 'مسلم شخصیات' میں ‏اپریل 6, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. صادق تیمی

    صادق تیمی رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 21, 2018
    پیغامات:
    27
    مولانا عیسی اصلاحی:ایک کامیاب معلم
    تحریر: صادق جمیل تیمی
    استاد محترم مولانا عیسی صاحب آج ہمارے بیچ نہیں رہے .مولانا ایک مرنجا مرنج شخصیت کے حامل تھے. خاکسار،منکسر المزاج اور ملنسار تھے بچوں سے نہایت ہی خندہ پیشانی کے ساتھ ملتے تھے. شیر شاہ آبادی ہونے کے ناطے اپنی زبان سے بے پناہ محبت و لگاو کی بنا پر کل وقت بنگالی ہی بولتے تھے. اردو بولتے وقت زبان میں قدر لکنت طاری ہوجاتی تھی -البتہ اپنے معلمی کے پیشے میں ایک کامیاب معلم تھے اقتصادی اعتبار سے مضبوط ہونے کے باوجود بھی سادگی پسند تھے .سرزمین کٹیہار کا ممتاز ادارہ "مدرسہ دار الھدی کرسیل "جو فی الوقت جامعہ ابن تیمیہ کی شاخ ہے. اپنی زندگی کا ایک معتد بہ قیمتی حصہ اسی ادارہ میں درس و تدریس میں صرف کیا ،تقریبا بایس سالوں تک تدریس کا فریضہ انجام دیتے رہے.. کوئی ایسااس ادارہ کا خوشہ چیں یا جیالہ نہیں ہوگا جس نے مولانا کے آگے زانوئے تلمذ تہہ نہ کیا ہو... ابتدائی کلاسیز میں آمد نامہ و فارسی اور علم الحساب اور دوسری فارسی زبان میں لکھی گئی نحو و صرف کی کتابوں کو پڑھاتے تھے. فارسی کے اسرار و رموز سے مکمل شناسایی تھی بچوں کی نفسیات سے واقف تھے بچوں کے اندر پڑھنے لکھنے کا شوق جگانے کا ہنر جانتے تھے. بصارت کی کمزوری کی وجہ سے اپنی عمر کی آخری دہلیز میں بڑے فریم کا خوبصورت چشمہ بھی لگاتے تھے چونکہ اپنے گاؤں کرسیل ہی میں مدرسہ تھا اس وجہ سے گھر ہی سے پیدل مدرسہ کو آتے تھے اور اپنی تہذیب کو اپناتے ہوئے لنگی ہی پہن کر کلاس میں آتے تھے گرمی کے ایام میں نرم پتلا لباس زیب تن کرتے اور سردی کے ایام میں کھادی کا موٹا گرم کپڑے ملبوس فرماتے اور خاکی رنگ کی چادر اوڑھتے تھے - کبھی کبھی بچوں سے دل لگی بھی کر لیا کرتے تھے اور اشارے سے بات کرتے جو شیخ کے نکتے کو سمجھتے تو اسے داد تحسین سے نوازے جاتے -اساتذہ و ذمہ داران مدرسہ سے اچھے روابط رکھتے تھے .ہر آن و ہر شان اچھے اخلاق و کردار کا مظاہرہ فرماتے -اپنے معلمی کے پیشے کے ساتھ ساتھ کاشتکاری کا بھی کام کر لیا کرتے تھے -عمر کے آخری مرحلہ میں رفیق حیات کا انتقال ہوجانے کی وجہ سے ایک معمر خاتون سے آج سے تقریبا چھ سال قبل رشتہ ازدواج سے منسلک ہوئے تھے. پسماندگان میں دو لڑکے اور تین لڑکیاں چھوڑ گئے جو الحمدلله شادی شدہ ہیں (دو بیٹوں کا جس میں ایک عالم دین نجم الحسن بخاری تھے پہلے ہی اللہ کے پیارے ہوگئے )
    اللہ سے دعا ہے کہ شیخ کے لغزشوں و خطاوں کو معاف کرے اور حسنات کے طفیل جنت کے اعلی مقام پر جگہ دے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے (آمین )
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
  2. بابر تنویر

    بابر تنویر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 20, 2010
    پیغامات:
    7,318
    انا للہ و انا الیہ راجعون
    آمین!
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  3. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,398
    انا للہ و انا الیہ راجعون، اللھم اغفر لہ و ارحمہ
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں