عمرہ زائرین میں وطن واپسی پر آب زم زم کے لیے کراچی ائرپورٹ پر لڑائی مار کٹائی

کنعان نے 'خبریں' میں ‏مئی 30, 2018 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,850
    عمرہ زائرین میں وطن واپسی پر آب زم زم کے لیے کراچی ائرپورٹ پر لڑائی مار کٹائی
    نیوز ڈیسک
    30/05/2018


    عمرہ زائرین وطن واپسی پر آب زم زم کے لیے کراچی ائرپورٹ پر لڑ پڑے۔ معاملہ بڑھنے پر عمرہ زائرین پر قابو پانے کے لیے اے ایس ایف کو طلب کرنا پڑ گیا۔

    بتایا گیا ہے کہ درجنوں عمرہ زائرین وطن واپسی پر آب زم زم کے معاملے پر بری طرح لڑ پڑے، جھگڑے پر قابو پانے کے لیے اے ایس ایف کو طلب کرنا پڑگیا۔ یہ واقعہ منگل کی صبح پیش آیا جس کے مطابق ماہ صیام میں عمرہ کرکے واپس آنے والے زائرین کراچی ایئرپورٹ پر آپس میں بری طرح لڑ پڑے۔ جھگڑے میں استقبال کے لیے آنے والے افراد بھی شامل ہو گئے۔

    اطلاعات کے مطابق یہ جھگڑا آب زم زم کی ملکیت کے معاملے پر ہوا معاملہ تلخ کلامی سے بڑھ کر ہاتھا پائی تک پہنچ گیا۔ کراچی ائیرپورٹ کے بین الاقوامی آمد کے باہر لاؤنج میں زائرین نے ایک دوسرے پر مکوں اور لاتوں کی بارش کردی۔ جھگڑے کے سبب عمرہ زائرین کی رشتہ دار خواتین نے ایئر پورٹ پر چیخ و پکار شروع کردی۔ معاملہ بہت بڑھ گیا تو عمرہ زائرین پر قابو پانے کے لیے اے ایس ایف کو طلب کرنا پڑگیا جس نے مداخلت کرکے دونوں فریقین میں صلح صفائی کرائی۔

    =======

    کتنی شرم کی بات ہے کچھ دیر پہلے یہ عمرہ زائرین جن سعودی عرب سے چلے تو تب تک یہ اپنے گناہوں کی معافی مانگ چکے تھے، خوب عبادات کی ہونگی اللہ سبحان تعالی کو راضی کرنے کے لئے، توبہ استغفار بھی کی ہونگی مگر پاکستان پہنچتے ہیں پانی پر ایسے جگھڑ رہے ہیں جیسے کسی اکھاڑے میں لڑنے آئے ہوں، اگر یہی کام کرنا تھا تو پھر کیا فائدہ ایسے عمرہ اور عمرہ میں عبادات کا، شائد سب ضائع کر دیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
  2. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,397
    ناقص انتطامات اور متوسط آدمی عمر میں ایک ادھ بار ہی عمرہ ادا کر سکتا اس پر بھی اگر 5 لٹر زمزم کا کوئی اور دعویدار نکل آئے تو غصہ ہونا فطری بات ہے۔ میں اپنی فیملی کے ساتھ ٹریول کرتا ہوں تو چھ سے سات زمزم کی بوتلیں یہاں سے بک کرواتے ہیں اور وہاں ایک دو کم ہی ملتی ہیں۔ اب جو بندہ لے کر ہی ایک بوتل گیا ہو اسکے سامنے دوسرا اس کی بوتل اٹھا کر چلتا بنے یا پھر کنویئر تک آنے سے پہلے ہی ایئرپورٹ کا عملہ اچک لے تو سوائے غصے کے کیا کر سکتے ہیں۔ ویسے معتمرین اور حجاج کو بھی صبر و تحمل سے کام لینا چاہئے اپنی بوتل کسی اور کو نہ اٹھانے دیں اور کسی اور کی بوتل خود نہ اٹھائیں۔ ایک بوتل کے پیچھے ساری محنت اور عبادت کو ضائع نہ ہونے دیں۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
    • متفق متفق x 1
  3. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,850
    السلام علیکم

    میرے خیال سے اب پانی ساتھ لے کر جانے کی کسی کو اجازت نہیں سعودی حکومت ائرلائن کو ایک ٹکٹ پر 2 پانی کی بوتلیں دیتی ہے جو فائنل ڈیسٹیشن پر ائرلائن انہیں دیتی ہے، یہاں عمرہ و حج سے آنے والے یہی بتاتے ہیں۔

    ہم تو جب بھی بربنگھم سٹی جائیں وہاں سے آب زم زم خرید کر لاتے ہیں سعودی پیکنگ میں سعودی عرب سے ایکپورٹ ہوتا ہے۔

    والسلام
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,397
    وعلیکم السلام
    نہیں بھائی ہم تو ایئر پورٹ سے اپنا خرید کے لے جاتے ہیں، فی ٹکٹ ایک بوتل! عمرہ زائرین کا شاید ہو سکتا ہے کہ الگ پیکج ہو۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  5. Abdulla Haleem

    Abdulla Haleem محسن

    شمولیت:
    ‏جولائی 19, 2014
    پیغامات:
    118
    جدہ سعودی عرب سے آنے والے تمام ایئرلائنز سے 5 لیٹر کی زمزم کی ایک بوتل کو بیگیج الاؤنس یا مسافر کے لئے مقرر کردہ وزن میں نہیں گنا جاتا۔ اور کسی اضافی چارجز کے بغیر لانے کی اجازت ہے۔
    اور یہ 5 لیٹر کی بوتل جدہ ائیر پورٹ سے معتمرین اور حجاج کو خریدنا ہوتا ہے۔

    فی پانچ لیٹر بوتل مع پیکنگ کی قیمت 9 سعودی ریال ہے۔

    عام طور پر انڈونیشیا ملائیشیا سنگاپور اور مالدیپ کے حج عمرہ گروپس والے اپنے اپنے گروپ کے نام اور نشان والے سٹیکر بوتلوں کی عدد سمیت ہر زمزم پیکنگ میں چپساں کردیتے ہیں۔ تاکہ اپنے اپنے ممالک پہونچنے کے بعد کسی بدنظمی کا شکار نہ ہوں اور حتی المقدور آسانی کے ساتھ گروپ کے بوتلوں کو الگ کیا جاسکے۔ کیونکہ سارے پیکنگ ایک جیسے اور ایک جیسے دکھائی دیتی ہے۔

    فرق صرف یہ ہے کہ فی گروپ کتنے مسافر ہیں۔ کسی گروپ میں سو زائر ہوں تو دوسرے گروپ میں ڈیڑھ سو بھی ہوسکتا ہے۔

    اور کبھی کبھی جدہ ائرپورٹ کی بد انتظامی کی وجہ سے سامان اور پانی چڑھائے بغیر ہی جہاز اپنے منزل مقصود پہونچ جاتی ہے۔
    ویسے جدہ ائیرپورٹ سے گزرنے والے جنوبی ایشیائی مسافروں کا پارہ چڑھنا کوئی اچنبے کی بات نہیں ہے۔ کیوں کہ سعودی عرب والے ان ممالک کے عوام الناس کے ساتھ غیر مہذب اور سختی کی روش اپناتے ہیں، خاص کر عمرہ/ حج ٹرمینل سے گزرنے والوں سے۔

    ویسے اپنے ملک پہونچ کر بھی ایسا حادثہ ہوجائے تو غصہ آجانا فطری بات ہوتی ہے۔

    مالدیپ میں حج عمرہ سیزن میں حجاج و معتمرین کے سہولت کیلئے اضافی نفری تعینات کئے جاتے ہیں جو صرف معتمرین اور حجاج کے گروپز کو سہولت کے کام کرتے ہیں ۔مالدیپ کے ایئرپورٹ میں بد انتظامی نہ ہونے کے برابر ہے

    الحمد للہ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں