زبان کا معاملہ بہت سنگین ہے

اہل الحدیث نے 'امام ابن قيم الجوزيۃ' میں ‏ستمبر 23, 2020 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,050
    ⛔ - زبان کا معاملہ بہت سنگین ہے ...

    ✍️ شيخ الاسلام امام شمس الدین ابن قيّم الجوزية - رحمه الله تعالى - فرماتے ہیں :

    ❐ ”ومن العجب أنّ الإنسان يهون عليه التحفظ والاحتراز من أكل الحرام والظلم والزنا والسرقة وشرب الخمر ومن النظر المحرّم وغير ذلك، ويصعب عليه التحفظ من حركة لسانه!

    "حیران کن امر یہ ہے کہ انسان کیلیے حرام خوری، ظلم، زنا، چوری، شراب نوشی اور بدنظری وغیرہ سے بچاؤ اور پرہیز نسبتاً آسان ہے۔ جبکہ زبان کی حرکت سے بچاؤ انتہائی مشکل ہے۔

    ❐ حتى ترى الرجلَ يشار إليه بالدين والزهد والعبادة،‏..، وهو يتكلّم بالكلمات من سخط الله، لا يُلقي لها بالًا، يزِلّ بالكلمة الواحدة منها أبعد مما بين المشرق والمغرب.

    یہاں تک کہ آپ دیکھیں گے کہ ایک شخص دینداری اور زہد و عبادت کے حوالے سے معروف ہوتا ہے، مگر وہ بغیر سوچے سمجھے ﷲ کی ناراضی پر مشتمل ایسے کلمات بول دیتا ہے، کہ ان میں سے ایک ایک کلمہ اسے مشرق سے مغرب تک پھسلا دیتا ہے۔

    ❐ وكم ترى من رجل متورعِّ عن الفواحش والظلم، ولسانه يفري في أعراض الأحياء والأموات، ولا يبالي ما يقول.“

    اور آپ کتنے ہی فواحش و ظلم کے قریب سے بھی نہ پھٹکنے والے پرہیز گاروں کو دیکھیں گے، جن کی زبانیں زندوں اور مردوں کی عزتوں پر دراز رہتی ہیں، انہیں اپنے بولنے کا کچھ پاس نہیں ہوتا۔"

    - |[ الداء والدواء : 366/1 ]|
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں