ہندوستان کے دل میں پاکستان

حیدرآبادی نے 'دیس پردیس' میں ‏جنوری 4, 2009 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. حیدرآبادی

    حیدرآبادی -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 14, 2007
    پیغامات:
    1,319
    :rose5wd: ہندوستان کے دل میں پاکستان :rosee:​

    ویسے تو ہندوستان کے بعض مخصوص متعصب سیاسی ذہن جب کبھی کسی ہندوستانی مسلم اکثریتی علاقہ پر غصہ اتارتے ہیں تو اسے ایک "چھوٹا پاکستان" کا لقب دے ڈالتے ہیں۔
    لیکن ۔۔۔۔۔
    ہندوستانی ریاست بہار میں ایک ایسا گاؤں آج بھی پایا جاتا ہے جس کا نام ہی "پاکستان" ہے اور جہاں ایک بھی مسلمان خاندان آباد نہیں ہے!

    دی بہار ٹائمز کی ایک خبر کے مطابق بہار کے 38 اضلاع میں سے ایک ضلع پورنیہ میں ایک گاؤں "پاکستان" کے نام سے بھی قائم ہے۔ ہند وپاک کی حالیہ کشیدگی اور دونوں ملکوں کے درمیان کی سابقہ جنگوں کے باوجود اس گاؤں کے باشندگان اپنے گاؤں کا نام تبدیل کرنے پر مصر بھی نہیں ہیں۔
    گاؤں کے ایک باشندے نے بتایا کہ : ہمارے آباء و اجداد یہاں کے مسلمان زمینداروں کے کھیتوں میں کام کیا کرتے تھے۔ تقسیم کے بعد وہ لوگ اپنی زمین ہمارے آباء واجداد کے حوالے کر گئے۔ انہی کی یاد میں گاؤں کی مقامی آبادی نے اپنے گاؤں کا نام "پاکستان" رکھ دیا۔
    ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ پنکج کمار کے بموجب سرکاری دستاویزات میں بھی اس گاؤں کا نام "پاکستان" ہی درج ہے۔

    اسی ضلع پورنیہ میں واقع ایک دوسرے گاؤں پوکھریا کے ایک فرد نے کہا کہ : آزادی سے قبل پڑوس کا یہ پورا گاؤں "پاکستان" مسلمانوں کا تھا لیکن 1947ء تا 1950ء کے دوران یہاں کے تمام مسلمان خاندان مشرقی پاکستان منتقل ہو گئے تھے۔

    1956ء کے ہندوستانی قانون برائے ریاستی تقسیم سے پہلے یہ غیر منقسم ضلع "پورنیہ" ، مشرقی پاکستان سے ملحق تھا۔ فی الوقت پورنیہ کا رقبہ 3229 مربع کیلومیٹر ہے اور اس کی آبادی قریب بیس لاکھ بتائی جاتی ہے۔ ضلع پورنیہ سے متعلق مزید تفصیل وکی پیڈیا پر یہاں ملاحظہ فرمائیں۔
     
  2. دانیال ابیر

    دانیال ابیر محسن

    شمولیت:
    ‏ستمبر 10, 2008
    پیغامات:
    8,415
    شکریہ حیدرآبادی بھائی ! :)
     
  3. رفی

    رفی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2007
    پیغامات:
    12,399
    شکریہ حیدرآبادی بھیا!

    دلچسپ خبر پڑھنے کو ملی ہے :00026:
     
  4. ابن عمر

    ابن عمر رحمہ اللہ بانی اردو مجلس فورم

    شمولیت:
    ‏نومبر 16, 2006
    پیغامات:
    13,354
  5. ڈان

    ڈان -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏ستمبر 28, 2007
    پیغامات:
    11,680
    السلام علیکم !!

    بہت خوب حیدرآبادی پاشا !!
    اپن کل ہی اس گاؤں سے متعلق یہاں پر پڑھ ریا تھا ۔
    بہرحال !! بہت بہت شکریہ
     
  6. usmansyed01

    usmansyed01 -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اگست 27, 2008
    پیغامات:
    121
  7. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    ہممم بہت خوب ڈیر وری نائس
     
  8. ابومصعب

    ابومصعب -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 11, 2009
    پیغامات:
    4,067
    السلام علیکم
    بہت خوب
    بہت اچھی چیز شئیر کی آپ نے میں‌اس موقع سے فائدہ اٹھاتے ہوئے کچھ ایسی چیزیں‌شئیر کرنا چاہونگا جو۔۔۔کہ اہم ہیں۔۔۔
    عام طور پر میں‌نے دیکھا کہ پاکستانیز (ہمارے بھن بھائی) بھارت کے نام سے اور ہندوستان کے نام بدک جاتے ہیں۔۔یعنی۔۔تھوڑے سا انہیں کچھ کچھ فیل ہوتا ہے۔۔اوکے۔۔۔۔ہونا بھی چاہیے۔۔۔۔!!!اللہ معاف کرے۔۔۔کیونکہ یہ فطر ت کے عین مطابق ہے۔۔۔
    کہ۔۔۔پاکستان کے حکمراں‌اور میڈیا بھی ہندوستان کی ایسی شکل بناکر پیش کرتے ہیں‌کہ۔۔۔فطری طور پر۔۔پاکستانی عوام۔۔۔ہندوستان کی عوام سے۔۔۔(جو مڈل ایسٹ میں آباد ہیں انکو چھوڑ کر)۔۔۔۔انڈنز اور انڈیا کے نام سے خوش نہیں‌رہتے۔۔۔
    جبکہ۔۔۔جو کچھ انڈیا میں نظر آتا ہے۔۔۔تھوڑی بہت سیاست اور مذہبی تعصب سے ہٹکر۔۔۔یا معصوم لوگوں‌کے ذہنوں‌میں یہودی لابی یا مخصوص ہندولابی کے تحت ہوا ہے۔۔۔
    عام انڈین۔۔۔اسے تو یہ سب چیزوں سے لینا دینا ہی نہیں۔۔۔
    بلکہ قریب جاکر دیکھیں تو۔۔۔۔ہندوستان میں مذہبی تعصب سیاسی مفادات اور پارٹیوں‌کی دین ہے۔۔
    ورنہ گنگا جمنی تہذہب کا اثر آج بھی ہر طرف ہے
    ایک چھوٹے سے گاؤ ں پاکستان کا ذکر تو پاشاہ بھائی نے خوب کیا
    میں حیدرآباد سے دو ایک مثالیں پیش کرونگا۔۔۔۔پاشاہ بھائی بھی سنکر۔۔۔سر دھنیں۔۔
    حیدرآباد کا ایک بہت بڑا ہندو گولڈ کا بیوپاری ہے
    سورج بھان کے نام سے۔۔۔یہ پاکستانی کرکٹ ٹیم کا اتنا پڑا فیان ہے کہ۔۔جب جب پاکستان کا مقابلہ کسی بھی ملک سے ہو۔۔۔یہ۔۔۔پاکستان کے حق میں‌ہو سٹہ لگا تاہے۔۔۔
    یہ تو ایک بات ضمنی آئی ہے۔۔
    عام طور پر اگر سیاسی مفادات اوربعض عناصر کو ہٹادیا جائے تو ہندوستان کے عوام ۔۔عام طور پر تعصب سے پاک ہیں۔۔
    ہم خود کئی ایسے پیور آر ایس ایس کے گھر جاتے ہیں‌ہمیں‌وہاں وہی عزت ملتی ہے۔۔۔جو کہ کسی مسلم گھرانے میں‌ملنا چاہیے۔۔۔۔
     
  9. ساجد تاج

    ساجد تاج -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 24, 2008
    پیغامات:
    38,756
    بہت خوب بھائی
     
  10. رابطہ

    رابطہ -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏فروری 15, 2009
    پیغامات:
    23
    عمدہ شیئرنگ ، بہت شکریہ
     
  11. الطحاوی

    الطحاوی -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 5, 2008
    پیغامات:
    1,825
    سورج بھان وہی زیورات کی دکان تونہیں جوچار مینا رکے پاس ہے۔سناتوایسا میں نے بھی ہے لیکن اس کی کوئی مصدقہ اطلاع نہیں ہے اورسنی سنائی بات آگے بڑھانامناسب نہیں ہے۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں